AskAhmadiyyat

*ایک اعتراض یہ اٹھایا جاتا ہے کہ احمدی عقیدے کے مطابق حضرت مریم علیھاالسلام کے یوسف نجار نامی شخص سے تعلقات تھے۔ جس کے نتیجے میں حضرت مریم علیھا السلام کو عیسیٰ علیہ السلام کا حمل ہوا۔ پھر بدنامی سے بچنے کے لیے حضرت مریم کا یوسف نجار سے نکاح کروادیاگیا۔ مرزاصاحب، حضرت مریم کا یوسف نجار کے ساتھ قبل نکاح پھرنے کے متعلق لکھتے ہیں : ’’ حضرت مریم صدیقہ کا اپنے منسوب یوسف نجار کے ساتھ قبل نکاح کے پھرنا اس اسرائیلی رسم پر پختہ شہادت ہے۔‘‘ (ایام الصلح۔روحانی خزائن ج 14 ص300) ’’جب چھ سات ماہ کا حمل نمایاں ہوگیا تب حمل کی حالت میں ہی قوم کے بزرگوں نے مریم کا یوسف نام ایک نجار سے نکاح کردیا اور اس کے گھر جاتے ہی ایک دو ماہ کےبعد مریم کو بیٹاپیدا ہوا وہی عیسیٰ یایسوع کے نام سے موسوم ہوا۔‘‘ (چشمہ مسیحی۔خزائن ج 20 ص355) ’’ مریم کی وہ شان ہے جس نے ایک مدت تک اپنے تئیں نکاح سے روکا۔ پھر بزرگان قوم کے نہائت اصرار سے بوجہ حمل کے نکاح کر لیا۔‘‘ (کشتی نوح۔ خزائن ج19ص18)

  1. اناجیل سےتائیدی حوالہ جات
  2. حضرت مسیح موعودؑ نے اناجیل پر ہونے والے اعتراضات کا ذکر کیا ہے نہ کہ خود اعتراض کیا ہے
We recommend Firefox for better fonts view.

Follow by Email
Facebook
Twitter